ایم پی جے کی “بندهوتا مہم” فرد کے وقار کو سمجھنے اور قوم کے اتحاد اور سالمیت کو طاقتور بنانے کے آئینی فرائض کے انجام دہی کی اپیل کے ساتھ اختتام پذیر

ممبئی: آج موومنٹ فار پیس اینڈ جسٹس فار ویلفیئر (اےم پی جے) نے یہاں ایک پریس میٹ منعقد کرکے تقریبا ڈیڑھ ماہ چلے ریاستگیر “بندھوتا مہم” کے تجربات کو میڈیا کے ساتھ شیئر کرتے ہوئے اپنے آئینی اخوت کو فروغ دینے کے پروگرام کو کامیاب بتایا اور اس طرح کی کوشش کو باقاعدگی سےانجام دینے کی تجویز پیش کرتے ہوئے اسےوقت کا مطالبہ قرار دیا – غور طلب ہے کہ ایم پی جے نے بندھوتا مہم 15 اگست 2017کو شروع کی تھی اور 2 اکتوبر 2017کو یہ اختتام پذیر ہوا-

میڈیا سے بات کرتے ہوئے محمد سراج، ریاستی صدر ایم پی جے نے کہا کہ، اس مہم کا مقصد بھارت کے آئینی خیال کو فروغ دینا تھا، جو اپنے تمام شہریوں کو فرد کے وقار اور قوم کے اتحاد و سالمیت کو یقینی بنانے والی، بندھوتا یعنی اخوت بڑھانےکا کام کرنے کا نہ صرف موقع فراہم کرتا ہے ، بلکہ اسے ملک کے ہر شہری کی بنیادی ذمہ داری بھی قرار دیتا ہے- انہوں نے نے کہا کہ، ہمارا آئین ہمیں عزت کے ساتھ زندگی بسر کرنے کی ضمانت دیتا ہے، لیکن آج ملک کی ایک بڑی آبادی خط افلاس سے نیچے زندگی بسر کرنے پر مجبور ہے- یہ کون سی عزت والی زندگی ہے، جبکہ ملک کی آدھی سے زیادہ دولت پر ملک کی کل آبادی کے صرف ایک فیصد لوگ ہی قبضہ جمائے بیٹھا ہے- جہاں ہمیں آئین عزت والی زندگی جینے کی ضمانت دیتا ہے، وہیں ہمیں معاشرے میں ایسے بھائی چارے کو فروغ دینے کے لئےبھی کہتا ہے، جس میں سب سے پہلے ایک شخص کے وقار کو اہم سمجھا جائے اور ملک کا ہر شہری ایک دوسرےکو بھائی سمجھے، تاکہ ملک میں اتحاد اور سالمیت یقینی بن سکے –

اس موقع پر تنظیم کے سیکرٹری جنرل، افسر عثمانی نے کہا کہ، آج ایک جامع اور جمہوری بھارت کے تصور پر بڑا خطرہ منڈلا رہا ہے، ہمارے ملک میں سماجی اور اقتصادی عدم مساوات کم ہونے کے بجائےبڑھتا ہی جا رہا ہے- ہماری یہ مہم تمام شہریوں کو اپنی آئینی ذمہ داریوں کو پورا کرنے کے لئے حوصلہ افزائی فراہم کریگی ، جو ملک میں باہمی بھائی چارے اور ہم آہنگی کی تعمیر کیلئے کام کرنے کو ہر شہری کا بنیادی فرض بتاتا ہے- انہوں نے کہا کہ، صوبہ کے کئی گنپتی پوجا منڈلوں نے ہمارے ساتھ بھائی چارے کے پیغام کو پھیلانے کیلئے ا اہم کردار ادا کیا اور اپنے پوجا پنڈالوں میں بھائی چارے کو فروغ دینے والےبینرز لگائے- اس کے علاوہ ریاست میں سرکاری اور غیر سرکاری تعلیمی اداروں میں آئینی اقدار و ملک کے تمہید دستور پر لیکچر منعقد کیا گیا، جس کا سماج کے ہر طبقے نے خیر مقدم کیا-

تنظیم کے نائب صدر رمیش کدم نے کہا کہ، ملک میں آئین کے تئیں لوگوں کو بیدار کرنا انتہائی ضروری ہے، جب تک لوگوں کو ان کے حقوق اور فرائض کے بارے میں پتہ نہیں چلے گا، اس وقت تک ملک میں عزت والی زندگی جینے کا خواب پورا نہیں ہو سکے گا اور MPJ یہ مقصد ایک یا دو مہموں سے حاصل نہیں کر سکتی ہے- یہ ایک مسلسل کئے جانے والا کام ہے- غور طلب ہے کہ، ایم پی جے نے اس بندهوتا مہم کے دوران تمہید دستور و آئینی اقدار کو عام انسان تک پہنچانے کیلئے سنودھان ریلی ، جلسہ عام ، کارنر میٹنگز ،سلوگن اور مضامین مقابلہ، لیکچر، ڈبیٹس وغیرہ کے ساتھ ساتھ گیت، ڈرامہ اورشعری نشستوں وغیرہ کا بھی انعقاد کیا –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply